تازہ ترین

Post Top Ad

loading...

منگل، 20 جنوری، 2015

سیرۃ النبیﷺ│قسط نمبر9

ثویبہ خوش نصیب عورت۔۔۔
سرکاردوعالمﷺ کی ولادت کادن بڑی خوشی اور مسرت والادن تھا۔ چچاابولہب جس نےدشمنی کاسب سےپہلا پتھررحمت للعالمینﷺ کوماراتھا۔ آج اتناخوش تھاکہ جس لونڈی نےاسےجاکر آمنہ کےلعل کی خوشخبری سنائی تھی اس کواسی وقت آزادکردیا۔ یہ خوش نصیب عورت ثویبہ کےنام سےمشہور ہوئیں۔ یہی ثویبہ حضرت آمنہ کےبعد دوسری عورت ہیں جنہوں نےسرکاردوعالمﷺ کودودھ پلانے کی سعادت حاصل کی۔ آنحضرتﷺ کےچچا حضرت حمزہ کوبھی ثویبہ نےدودھ پلایا۔ اسی بناپر حضرت حمزہ آنحضرتﷺ کےچچااور رضاعی بھائی بھی تھے۔
ثویبہ کےاسلام لانے میں اختلاف ہے۔ بعض نےانکا ذکرصحابیہ کی حیثیت سےکیاہے۔ بہرحال انکابڑامقام ہےاور وہ قابل قدرہیں۔ آنحضرتﷺ ان کی بڑی عزت کیاکرتےتھے۔ ہرطرح سےان کاخیال رکھتے تھے۔ ہجرت کےبعدمدینہ سےبھی ان کے لیے ہدایۃبھیجتے اوران کی خیریت دریافت فرماتے رہتے۔
فتح مکہ کےموقع پرآپﷺ نےثویبہ کےبارے میں پوچھاتوپتہ چلاکہ ان کاانتقال ہوگیاہے۔
ثویبہ کی شان کااندازہ اس بات سے لگایا جاسکتاہے کہ ابولہب کےمرنےکےبعد حضرت عباس نےابولہب کوخواب میں دیکھااور پوچھا کیاحال ہے؟ اُس نےکہابہت تنگی اورتکلیف میں ہوں۔ ثویبہ کوآزاد کرنے کےصلہ میں ہاتھ کی جس انگلی سےاشارہ کیاتھااس کےبرابرمقدارمیں پانی پلادیاجاتاہے۔
ایک دوسری روایت میں ہےکہ ابولہب نےکہاکہ میں نےتمہارے بعدکوئی راحت نہیں دیکھی بس ہردوشنبہ کوعذاب میں تخفیف ہوجاتی ہے دوشنبہ آنحضرتﷺ کی ولادت کادن ہے اس دن ابولہب نے ثویبہ کوآزاد کردیاتھا۔
(جاری ہے)

مضمون نگار:۔ محمدابوبکرصدیق
پتہ:۔ کراچی│پاکستان
رابطہ:۔ مضمون نگار کی اجازت کے بغیر برقی پتہ یا موبائل نمبر شائع نہیں کیا جاتا۔

Post Top Ad

loading...