Header Ads

اِحرام باندھنے کے مسائل۔

اِحرام باندھنے کے مسائل

غسل کے بعد اِحرام باندھنے سے پہلے خوشبو اور سرمہ استعمال کرنا
س… کیا غسل کے بعد اِحرام باندھنے سے پہلے بدن پر اور اِحرام کے کپڑوں پر خوشبو لگاسکتے ہیں؟ اور تیل اور سرمہ استعمال کرسکتے ہیں یا نہیں؟
ج… اِحرام باندھنے سے پہلے تیل اور سرمہ لگانا جائز ہے، اور خوشبو لگانے میں یہ تفصیل ہے کہ بدن کو خوشبو لگانا تو مطلقاً جائز ہے، اور کپڑوں کو ایسی خوشبو لگانا جائز ہے جس کا جسم باقی نہ رہے، اور جس خوشبو کا جسم باقی رہے وہ کپڑوں کو لگانا ممنوع ہے۔
میقات کے بورڈ اور تنعیم میں فرق
س… مکہ کے حدود سے پہلے جہاں میقات کا بورڈ لگا ہوتا ہے اور لکھا ہوتا ہے کہ غیرمسلم آگے داخل نہیں ہوسکتے، وہاں سے اِحرام باندھے یا تنعیم جاکر مسجدِ عائشہ سے اِحرام باندھے؟ میقات کے بورڈ اور تنعیم میں کیا فرق ہے؟
ج… یہ میقات کا بورڈ نہیں، بلکہ حدودِ حرم کا بورڈ ہے۔
          تنعیم بھی حدودِ حرم سے باہر ہے، اس لئے ان دونوں کے درمیان کوئی فرق نہیں۔ اہلِ مکہ مسجدِ تنعیم سے جو اِحرام باندھتے ہیں اس کی وجہ یہ ہے کہ وہ قریب ترین جگہ ہے جو حدِ حرم سے باہر ہے۔ نیز اُمّ الموٴمنین حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا وہاں سے عمرہ کا اِحرام باندھ کر آئی تھیں۔ اور بعض حضرات عمرہ کا اِحرام باندھنے کے لئے مکہ مکرّمہ سے جعرانہ جاتے ہیں، کیونکہ آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم غزوہٴ حنین کے بعد وہاں سے اِحرام باندھ کر عمرہ کے لئے تشریف لائے تھے۔ اہلِ مکہ کے اِحرامِ عمرہ کے لئے ان دو جگہوں کی کوئی تخصیص نہیں، وہ حدودِ حرم سے باہر کہیں سے بھی اِحرام باندھ کر آجائیں، صحیح ہے۔
اِحرام کی حالت میں چہرے یا سر کا پسینہ صاف کرنا
س… آیا اِحرام کی حالت میں چہرے یا سر کا پسینہ پونچھ سکتے ہیں، کپڑے سے ہاتھ سے؟
ج… مکروہ ہے۔
س… کیا اِحرام کی حالت میں حجرِ اَسود کا بوسہ لے سکتے ہیں؟ یا ملتزم پر کھڑے ہوسکتے ہیں، کیونکہ ہمارے مولانا صاحب کا کہنا ہے کہ جس جگہ عطر لگا ہوا ہو اس کو ہاتھ نہیں لگاسکتے۔
ج… حجرِ اَسود یا ملتزم پر اگر خوشبو لگی ہو تو محرِم کو اس کا چھونا جائز نہیں۔
سردی کی وجہ سے اِحرام کی حالت میں سوئٹر یا گرم چادر استعمال کرنا
س… اگر مکہ مکرّمہ میں سردی ہو اور کوئی آدمی عمرہ کے لئے جائے تو وہ اِحرام کی دو چادروں کے علاوہ گرم کپڑا مثلاً: سوئٹر وغیرہ یا گرم چادر استعمال کرسکتا ہے؟ تفصیل سے جواب عنایت فرمائیں۔
ج… گرم چادریں استعمال کرسکتا ہے، مگر سر نہیں ڈھک سکتا، اور جو کپڑے بدن کی وضع پر سلے ہوئے بنائے جاتے ہیں جیسے جرابیں، ان کا استعمال جائز نہیں۔
عورتوں کا اِحرام میں چہرے کو کھلا رکھنا
س… میں نے سنا ہے کہ حدیث میں آیا ہے کہ عورت کا اِحرام چہرے میں ہے، جس سے معلوم ہوتا ہے کہ چہرہ کھلا رکھنا چاہئے، حالانکہ قرآن و حدیث میں عورت کو چہرہ کھولنے سے سختی سے منع فرمایا ہے، لہٰذا ایسی کیا صورت ہوگی جس سے اس حدیث پر بھی عمل ہوجائے اور چہرہ بھی ڈھکا رہے؟ کیونکہ مجھے اُمید ہے کہ اس کی کوئی صورت شریعتِ مطہرہ میں ضرور بتائی گئی ہوگی۔
ج… یہ صحیح ہے کہ اِحرام کی حالت میں چہرے کو ڈھکنا جائز نہیں، لیکن اس کے یہ معنی نہیں کہ اِحرام کی حالت میں عورت کو پردے کی چھوٹ ہوگئی، بلکہ جہاں تک ممکن ہو پردہ ضروری ہے، یا تو سر پر کوئی چھجا سا لگایا جائے اور اس کے اُوپر سے کپڑا اس طرح ڈالا جائے کہ پردہ ہوجائے، مگر کپڑا چہرے کو نہ لگے، یا عورت ہاتھ میں پنکھا وغیرہ رکھے اور اسے چہرے کے آگے کرلیا کرے۔ اس میں شبہ نہیں کہ حج کے طویل اور پُرہجوم سفر میں عورت کے لئے پردے کی پابندی بڑی مشکل ہے، لیکن جہاں تک ہوسکے پردے کا اہتمام کرنا ضروری ہے، اور جو اپنے بس سے باہر ہو تو اللہ تعالیٰ معاف فرمائیں۔
عورت کے اِحرام کی کیا نوعیت ہے؟ اور وہ اِحرام کہاں سے باندھے؟
س… مردوں کے لئے اِحرام دو چادروں کی شکل میں ہوتا ہے، عورتوں کے لئے اِحرام کی کیا شکل ہوگی؟ اور کیا اِحرام مجھے اور میرے بچوں کو گھر سے باندھنا ہوگا؟ جبکہ میں برقعے کی حالت میں ہوں؟
ج… مردوں کو اِحرام کی حالت میں سلے ہوئے کپڑے ممنوع ہیں، اس لئے وہ اِحرام باندھنے سے پہلے دو چادریں پہن لیتے ہیں، عورتوں کو اِحرام باندھنے کے لئے کسی خاص قسم کا لباس پہننا لازم نہیں، اس لئے وہ معمول کے کپڑوں میں اِحرام باندھ لیتی ہیں، البتہ عورت کا اِحرام اس کے چہرے میں ہوتا ہے، اس لئے اِحرام کی حالت میں وہ چہرے کو اس طرح نہ ڈھکیں کہ کپڑا ان کے چہرے کو لگے، مگر نامحرَموں سے چہرے کو چھپانا بھی لازم ہے، اس لئے ان کو چاہئے کہ سر پر کوئی چیز ایسی باندھ لیں جو چھجے کی طرح آگے کو بڑھی ہوئی ہو، اس پر نقاب ڈال لیں تاکہ نقاب کا کپڑا چہرے کو نہ لگے اور پردہ بھی ہوجائے۔ حج کا اِحرام میقات سے پہلے باندھنا ضروری ہے، گھر سے باندھنا ضروری نہیں۔
عورت کا اِحرام کے اُوپر سے سر کا مسح کرنا غلط ہے
س… آج کل دیکھا ہے کہ عورتیں جو اِحرام باندھتی ہیں تو بال بالکل ڈھک جاتے ہیں اور اس کا سر سے بار بار اُتارنا عورتوں کے لئے مشکل ہوتا ہے، تو آیا سر کا مسح اسی کپڑے کے اُوپر ٹھیک ہے یا نہیں؟
ج… عورتیں جو سر پر رُومال باندھتی ہیں، شرعاً اس کا اِحرام سے کوئی تعلق نہیں، یہ رُومالی صرف اس لئے باندھی جاتی ہے کہ بال بکھریں اور ٹوٹیں نہیں۔ عورتوں کو اس رُومال پر مسح کرنا صحیح نہیں، بلکہ رُومالی اُتار کر سر پر مسح کرنا لازم ہے، اگر رُومالی پر مسح کیا اور سر پر مسح نہیں کیا تو نہ وضو ہوگا، نہ نماز ہوگی، نہ طواف ہوگا، نہ حج ہوگا، نہ عمرہ۔ کیونکہ یہ افعال بغیر وضو جائز نہیں، اور سر پر مسح کرنا فرض ہے، بغیر مسح کے وضو نہیں ہوتا۔
عورت کا ماہواری کی حالت میں اِحرام باندھنا
س… جدہ روانگی سے قبل ماہواری کی حالت میں اِحرام باندھ سکتے ہیں یا نہیں؟
ج… حیض کی حالت میں عورت اِحرام باندھ سکتی ہے، بغیر دوگانہ پڑھے حج یا عمرہ کی نیت کرلے اور تلبیہ پڑھ کر اِحرام باندھ لے۔
حج میں پردہ
س… آج کل لوگ حج پر جاتے ہیں، عورتوں کے ساتھ کوئی پردہ نہیں کرتا ہے، حالتِ اِحرام میں یہ جواب دیا جاتا ہے کہ اگر پردہ کرایا جائے تو منہ کے اُوپر کپڑا لگے گا، تو اس کے لئے کیا کیا جائے؟
ج… پردے کا اہتمام تو حج کے موقع پر بھی ہونا چاہئے، اِحرام کی حالت میں عورت پیشانی سے اُوپر کوئی چھجا سا لگائے تاکہ پردہ بھی ہوجائے اور کپڑا چہرے کو لگے بھی نہیں۔
طواف کے علاوہ کندھے ننگے رکھنا مکروہ ہے
س… حج یا عمرہ میں اِحرام باندھتے ہیں، اکثر لوگ کندھا کھلا رکھتے ہیں، اس کے لئے شرعی مسئلہ کیا ہے؟
ج… شرعی مسئلہ یہ ہے کہ حج و عمرہ کے جس طواف کے بعد صفا مروہ کی سعی ہو اس طواف میں رَمل اور اِضطباع کیا جائے۔ رَمل سے مراد ہے پہلوانوں کی طرح کندھے ہلاکر تیز تیز چلنا، اور اِضطباع سے مراد کندھا کھولنا ہے۔ ایسے طواف کے علاوہ خصوصاً نماز میں کندھے ننگے رکھنا مکروہ ہے۔
ایک اِحرام کے ساتھ کتنے عمرے کئے جاسکتے ہیں؟
س… خدائے بزرگ و برتر کے فضل و کرم سے میں امسال حج و زیارت کے لئے جاوٴں گا۔ قیامِ مکہ معظمہ کے دوران میں اپنے والدین کی جانب سے پانچ عمرے ادا کرنا چاہتا ہوں، ان عمروں کے لئے حدودِ حرم کے باہر تنعیم یا جعرانہ جاکر نفلی عمرہ کا اِحرام باندھا جائے گا، کیا پانچ مرتبہ یعنی ہر عمرہ کے لئے علیحدہ علیحدہ یا ایک مرتبہ اِحرام باندھ کر ایک دن میں ایک مرتبہ عمرہ کیا جائے؟ یا اسی اِحرام میں ایک دن میں دو یا تین مرتبہ عمرہ کیا جاسکتا ہے؟
ج… ہر عمرے کا الگ اِحرام باندھا جاتا ہے، اِحرام باندھ کر طواف و سعی کرکے اِحرام کھول دیتے ہیں، اور پھر تنعیم یا جعرانہ جاکر دوبارہ اِحرام باندھتے ہیں۔ ایک اِحرام کے ساتھ ایک سے زیادہ عمرے نہیں ہوسکتے اور عمرہ (یعنی طواف اور سعی) کرنے کے بعد جب تک بال اُتار کر اِحرام نہ کھولا جائے، دُوسرے عمرے کا اِحرام باندھنا بھی جائز نہیں۔
عمرہ کا اِحرام کہاں سے باندھا جائے؟
س… عمرہ کے لئے اِحرام باندھنے کا مسئلہ دریافت طلب ہے۔ ایک معتبر کتاب میں ”حج اور عمرہ کا فرق“ کے عنوان سے تحریر ہے کہ عمرہ کا اِحرام سب کے لئے ”حِلّ“ (حدودِ حرم سے باہر کی جگہ) سے ہے، البتہ اگر آفاقی باہر سے بہ ارادہ حج آئے تو اپنے میقات سے اِحرام باندھنا ہوگا۔
          الف:… اگر کوئی شخص بہ ارادہ حج نہیں بلکہ صرف عمرہ کا ارادہ رکھتا ہے اور باوجود آفاقی ہونے کے حدودِ حرم سے باہر مثلاً جدہ میں اِحرام باندھ سکتا ہے یا نہیں؟
          ب:… جدہ میں ایک دو یوم قیام کرنے کے بعد عازمِ عمرہ ہو تو اس پر ”اہلِ حِلّ“ کا اطلاق ہوگا یا نہیں؟
ج… جو شخص بیرون ”حِلّ“ سے مکہ مکرّمہ جانے کا ارادہ رکھتا ہو، اس کو میقات سے بغیر اِحرام کے گزرنا جائز نہیں، بلکہ حج یا عمرہ کا اِحرام باندھنا اس پر لازم ہے۔ اگر بغیر اِحرام کے گزر گیا تو میقات کی طرف واپس لوٹ کر میقات سے اِحرام باندھنا ضروری ہے، اگر واپس نہ لوٹا تو دَم لازم ہوگا۔ جو شخص مکہ مکرّمہ کے قصد سے گھر سے چلا ہے اس کا جدہ میں ایک دو روز ٹھہرنا لائقِ اعتبار نہیں، اور وہ اس کی وجہ سے ”اہلِ حِلّ“ میں شمار نہیں ہوگا۔ ہاں! اگر کسی کا ارادہ جدہ جانے کا ہی تھا، وہاں پہنچ کر مکہ مکرّمہ جانے کا قصد ہوا تو اس پر ”اہلِ حِلّ“ کا اطلاق ہوگا، واللہ اعلم بالصواب!

          اس مسئلے کو سمجھنے کے لئے چند اصطلاحات ذہن میں رکھئے:

          میقات:… مکہ مکرّمہ کے اطراف میں چند جگہیں مقرّر ہیں، باہر سے مکہ مکرّمہ جانے والے شخص کو ان جگہوں سے اِحرام باندھنا لازم ہے، اور بغیر اِحرام کے ان سے آگے بڑھنا ممنوع ہے۔
          آفاقی:… جو شخص میقات سے باہر رہتا ہو۔
          حرم:… مکہ مکرّمہ کی حدود، جہاں شکار کرنا، درخت کاٹنا وغیرہ ممنوع ہے۔
          حِلّ:… حرم سے باہر اور میقات کے اندر کا حصہ ”حل“ کہلاتا ہے۔
مکی، حج یا عمرہ کا اِحرام کہاں سے باندھے گا؟
س… ہم مکہ مکرّمہ کی حدود میقات کے اندر مقیم ہیں، ہم فریضہٴ حج یا عمرہ کے لئے اپنی رہائش گاہ سے اِحرام باندھ سکتے ہیں یا میقات جانا ہوگا؟
ج… جو لوگ میقات اور حدودِ حرم کے درمیان رہتے ہیں ان کے لئے حِلّ میقات ہے، وہ حج اور عمرہ دونوں کا اِحرام حدودِ حرم میں داخل ہونے سے پہلے باندھ لیں۔ اور جو لوگ مکہ مکرّمہ یا حدودِ حرم کے اندر رہتے ہیں وہ حج کا اِحرام حدودِ حرم کے اندر سے باندھیں اور عمرہ کا اِحرام حدودِ حرم سے باہر نکل کر حِلّ سے باندھیں۔ چنانچہ اہلِ مکہ حج کا اِحرام مکہ سے باندھتے ہیں اور عمرہ کا اِحرام باندھنے کے لئے تنعیم مسجدِ عائشہ جاتے ہیں یا جعرانہ جاتے ہیں۔

          نوٹ:… میقات کے اندر اور حدودِ حرم سے باہر کے علاقے کو ”حِلّ“ کہا جاتا ہے۔
عمرہ کرنے والا شخص اِحرام کہاں سے باندھے؟
س… عمرہ کے لئے گھر سے اِحرام باندھنا فرض ہے یا جدہ جاکر؟
ج… میقات سے پہلے فرض ہے۔ سفر ہوائی جہاز سے ہو تو ہوائی جہاز پر سوار ہونے سے پہلے اِحرام باندھ لیا جائے، جدہ تک اِحرام کے موٴخر کرنے کے جواز میں علماء کا اختلاف ہے، احتیاط کی بات یہی ہے کہ اِحرام کو جدہ تک موٴخر نہ کیا جائے۔
ہوائی جہاز پر سفر کرنے والا اِحرام کہاں سے باندھے؟
س… ریاض سے جب عمرہ یا حج ادا کرنے کے لئے بذریعہ ہوائی جہاز جدہ جاتے ہیں تو دورانِ سفر ہوائی جہاز کا عملہ اعلان کرتا ہے کہ میقات آگئی ہے، اِحرام باندھ لیں۔ بعض لوگ جہاز میں ہی وضو کرکے اِحرام باندھ لیتے ہیں، جبکہ بعض لوگ جدہ میں اُتر کر ایئرپورٹ پر غسل یا وضو کرکے اِحرام باندھتے ہیں اور اِحرام کے نفل پڑھ کر پھر مکہ مکرّمہ جاتے ہیں۔ جدہ سے مکہ مکرّمہ جائیں تو راستے میں بھی میقات آتی ہے، جن لوگوں نے ایئرپورٹ سے اِحرام باندھا تھا وہ جدہ والی میقات پر اِحرام کی نیت کرلیتے ہیں۔ اب سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ جہاز میں جو میقات آنے کا اعلان ہوتا ہے وہاں اگر اِحرام نہ باندھا جائے تو کیا حرج ہوگا؟ کیونکہ جہاز تو مکہ مکرّمہ کے بجائے جدہ جائے گا، بہت سے لوگ اس شبہ میں رہتے ہیں کہ اِحرام ضروری جہاز میں ہی باندھنا چاہئے، میقات سے بغیر اِحرام کے نہیں گزرنا چاہئے، جبکہ جہاز میں اِحرام کے نفل بھی نہیں پڑھے جاسکتے، براہِ کرم وضاحت فرمائیں۔
ج… ایسے لوگ جو میقات سے گزر کر جدہ آتے ہیں، ان کو میقات سے پہلے اِحرام باندھنا چاہئے۔ اِحرام باندھنے کے لئے نفل پڑھنا سنت ہے، اگر موقع نہ ہو تو نفلوں کے بغیر بھی اِحرام باندھنا صحیح ہے۔ جدہ سے مکہ جاتے ہوئے راستے میں کوئی میقات نہیں آتی، البتہ اس میں اختلاف ہے کہ جدہ میقات کے اندر ہے یا خود میقات ہے، جو لوگ ہوائی جہاز سے سفر کر رہے ہوں ان کو چاہئے کہ جہاز پر سوار ہونے سے پہلے اِحرام باندھ لیں، یا کم از کم چادر ہی پہن لیں اور جب میقات کا اعلان ہو تو جہاز میں اِحرام باندھ لیں، جدہ پہنچنے کا انتظار نہ کریں۔
بحری جہاز کے ملازمین اگر حج کرنا چاہیں تو کہاں سے اِحرام باندھیں گے؟
س… بحری جہاز کے ملازمین جن کو حج کے لئے اجازت ملتی ہے، یلملم کی پہاڑی (میقات) کو عبور کرتے وقت اپنے فرائض کی ادائیگی کی وجہ سے اِحرام باندھنے سے معذور ہوتے ہیں۔
          ۱:… اگر عازمینِ حج (جہاز کے ملازمین) کی نیت پہلے سے مکہ مکرّمہ جانے کی ہو تاکہ وہ عمرہ و حج ادا کرسکیں۔
          ۲:… وقت کی کمی کے باعث پہلے مدینہ منوّرہ جانے کی نیت ہو۔
          مندرجہ بالا اُمور میں غلطی سرزد ہونے کی صورت میں کفارہ کی ادائیگی کی صورت کیا ہوگی؟
ج… یہ سمجھ میں نہیں آیا کہ اِحرام، فرائضِ منصبی سے کیسے مانع ہے؟ بہرحال مسئلہ یہ ہے:
          ۱:… اگر یہ ملازمین صرف جدہ تک جائیں گے اور پھر واپس آجائیں گے، ان کو مکہ مکرّمہ نہیں جانا تو وہ اِحرام نہیں باندھیں گے۔
          ۲:… اگر ان کا ارادہ مکہ مکرّمہ جانے سے پہلے مدینہ منوّرہ جانے کا ہے تب بھی ان کو اِحرام باندھنے کی ضرورت نہیں۔
          ۳:… اور اگر وہ حج کا قصد رکھتے ہیں اور جدہ پہنچتے ہی ان کو مکہ مکرّمہ جانا ہے تو ان کو یلملم سے اِحرام باندھنا لازم ہے۔ اس لئے جو ملازمین ڈیوٹی پر ہوں وہ سفر کے دوران صرف جدہ جانے کا ارادہ کریں، وہاں پہنچ کر جب ان کو مکہ مکرّمہ جانے کی اجازت مل جائے تب وہ جدہ سے اِحرام باندھ لیں۔
کراچی سے عمرہ پر جانے والا کہاں سے اِحرام باندھے؟
س… ہم لوگ اگلے ماہ عمرہ پر جانا چاہتے ہیں، پوچھنا یہ ہے کہ کیا کراچی سے اِحرام باندھنا ضروری ہے یا جدہ جاکر باندھ سکتے ہیں (مردوں کے لئے)؟
ج… چونکہ پرواز کے دوران جہاز میقات سے (بلکہ بعض اوقات حدودِ حرم سے) گزر کر جدہ پہنچتا ہے، اس لئے جہاز پر سوار ہونے سے پہلے یا سوار ہوکر اِحرام باندھ لیا جاتا ہے۔ بہرحال میقات کی حد عبور کرنے سے پہلے اِحرام باندھ لینا لازم ہے، جدہ جاکر نہیں۔ اور اگر جدہ پہنچ کر اِحرام باندھا تب بھی بعض اہلِ علم کے نزدیک جائز ہے۔
جس کی فلائٹ یقینی نہ ہو وہ اِحرام کہاں سے باندھے؟
س… میں پی آئی اے کا ملازم ہوں اور عمرہ کرنے کا قصد ہے۔ سوال یہ ہے کہ ایئرلائن کے ملازمین کو فری ٹکٹ ملتا ہے مگر ان کی سیٹ کا تعین نہیں ہوتا۔ جس دن اور جس طیارے میں خالی سیٹ ہوتی ہے اس وقت ملازم جاسکتا ہے، لہٰذا اکثر دو تین دن تک ایئرپورٹ جانا آنا پڑتا ہے، اس وجہ سے کراچی سے اِحرام باندھ کر چلنا محال ہے، ایسی مجبوری کی حالت میں کیا یہ دُرست ہے کہ جدہ پہنچ کر وہاں ایک دن قیام کرنے کے بعد اِحرام باندھ لیا جائے؟
ج… جب منزلِ مقصود جدہ نہیں، بلکہ مکہ مکرّمہ ہے، تو اِحرام میقات سے پہلے باندھنا ضروری ہے۔ ایئرلائن کے ملازمین کو چاہئے کہ جب ان کی نشست کا تعین ہوجائے اور ان کو بورڈنگ کارڈ مل جائے تب اِحرام باندھیں، اگر انتظار گاہ میں اِحرام باندھنے کا وقت ہو تو وہاں باندھ لیں، ورنہ جہاز پر سوار ہوکر باندھ لیں۔
میقات سے بغیر اِحرام کے گزرنا
س… عمرہ ادا کرنے کے بعد ہم مدینہ روانہ ہوئے اور مغرب اور عصر کی نمازیں وہاں ادا کیں اور واپس جدہ آگئے، میقات سے گزر کر آئے اور رات جدہ میں گزری، اور صبح پھر مکہ مکرّمہ عمرہ کے لئے روانہ ہوئے اور مکہ مکرّمہ کے قریب میقات سے اِحرام باندھا اور عمرہ کیا، کیا میقات سے گزر کر جو ہم نے عمرہ کیا اس میں کوئی حرج ہے؟
ج… اگر میقات سے گزرتے وقت آپ کا قصد مکہ مکرّمہ جانے کا تھا تو میقات پر آپ کے ذمہ اِحرام باندھنا لازم تھا، اور اس کے کفارہ کے طور پر دَم واجب ہے، اور اگر اس وقت جدہ آنے ہی کا ارادہ تھا، یہاں آکے عمرہ کا ارادہ ہوا تو آپ کے ذمہ کچھ لازم نہیں۔
س… یہ بتائیں کہ جو پاکستانی حضرات سعودی عرب میں جدہ اور طائف میں ملازم ہیں، اگر وہ عمرہ کی نیت سے مکہ (خانہٴ کعبہ) جاتے ہیں تو میقات سے اِحرام باندھنا پڑتا ہے، اگر کوئی شخص خالی طواف کی غرض سے مکہ جائے تو کیا اِحرام باندھنا لازمی ہے؟ کیونکہ یہاں مقیم اکثر لوگ بغیر اِحرام کے طواف کرنے مکہ چلے جاتے ہیں، کیا یہ طریقہ ٹھیک ہے؟ اگر نہیں تو آپ ہمیں اس کا صحیح مسئلہ بتائیں۔
ج… آپ کا سوال بہت اہم ہے، اس سلسلے میں چند مسئلے اچھی طرح ذہن نشین کرلیجئے!
          ۱:… مکہ شریف کے چاروں طرف کا کچھ علاقہ ”حرم“ کہلاتا ہے، جہاں شکار کرنا اور درخت کاٹنا ممنوع ہے۔ ”حرم“ سے آگے کم و بیش فاصلے پر کچھ جگہیں مقرّر ہیں جن کو ”میقات“ کہا جاتا ہے، اور جہاں سے حاجی لوگ اِحرام باندھا کرتے ہیں۔
          ۲:… جو لوگ ”حرم“ کے علاقے میں رہتے ہوں یا میقات کے اندر رہتے ہوں، وہ تو جب چاہیں مکہ مکرّمہ میں اِحرام کے بغیر جاسکتے ہیں۔ لیکن جو شخص میقات کے باہر سے آئے، اس کے لئے میقات پر حج یا عمرہ کا اِحرام باندھنا لازم ہے، گویا ایسے شخص پر حج یا عمرہ لازم ہوجاتا ہے، خواہ اس شخص کا مکہ مکرّمہ جانا حج و عمرہ کی نیت سے نہ ہو، بلکہ محض کسی ضروری کام سے مکہ مکرّمہ جانا چاہتا ہو یا صرف حرم شریف میں جمعہ پڑھنے یا صرف طواف کرنے کے لئے جانا چاہتا ہو۔ الغرض خواہ کسی مقصد کے لئے بھی مکہ مکرّمہ جائے وہ میقات سے اِحرام کے بغیر نہیں جاسکتا۔
          ۳:… اگر کوئی شخص میقات سے اِحرام کے بغیر گزر گیا تو اس پر لازم ہے کہ مکہ شریف میں داخل ہونے سے پہلے پہلے میقات پر واپس لوٹے اور وہاں سے اِحرام باندھ کر جائے۔
          ۴:… اگر وہ واپس نہیں لوٹا تو اس کے ذمہ ”دَم“ واجب ہوگا۔
          ۵:… جو شخص میقات سے بغیر اِحرام مکہ مکرّمہ چلا جائے، اس پر حج یا عمرہ لازم ہے، اگر کئی بار بغیر اِحرام کے میقات سے گزر گیا تو ہر بار ایک حج یا عمرہ واجب ہوگا۔ ان مسائل سے معلوم ہوا کہ جو لوگ میقات سے باہر رہتے ہیں وہ صرف طواف کرنے کے لئے مکہ مکرّمہ نہیں جاسکتے بلکہ ان کے لئے ضروری ہے کہ وہ میقات سے عمرہ کا اِحرام باندھ کر جایا کریں۔ اور یہ بھی معلوم ہوا کہ وہ جتنی بار بغیر اِحرام کے جاچکے ہیں ان پر اتنے دَم اور اتنے ہی عمرے واجب ہوگئے۔
          ۶:… جدہ میقات سے باہر نہیں، لہٰذا جدہ سے بغیر اِحرام کے مکہ مکرّمہ آنا صحیح ہے، جبکہ طائف میقات سے باہر ہے، لہٰذا وہاں سے بغیر اِحرام کے آنا صحیح نہیں۔
بغیر اِحرام کے میقات سے گزرنا جائز نہیں
س… بعض لوگ جھوٹ بول کر بغیر اِحرام کے حدودِ حرم میں چلے جاتے ہیں اور پھر مسجدِ عائشہ سے اِحرام باندھتے ہیں، کیا اس صورت میں دَم لازم آتا ہے؟
ج… بغیر اِحرام کے حدودِ حرم میں داخل ہونا گناہ ہے، اور ایسے شخص کے ذمہ لازم ہے کہ واپس میقات پر جاکر اِحرام باندھ کر آئے، اگر یہ شخص دوبارہ میقات پر گیا اور وہاں سے اِحرام باندھ کر آیا تو اس کے ذمہ سے دَم ساقط ہوگیا، اگر واپس نہ گیا تو اس پر دَم واجب ہے اور یہ دَم اس کے ذمہ ہمیشہ واجب رہے گا جب تک اسے ادا نہ کرے، اور اس ترکِ واجب کا گناہ بھی اس کے ذمہ واجب رہے گا۔ نفلی حج کے لئے گناہِ کبیرہ کا ارتکاب کرنا عبادت نہیں بلکہ خواہشِ نفس کی پیروی ہے۔
          نوٹ:… جو لوگ میقات کے باہر سے آئے ہوں، ان کے لئے مسجدِ عائشہ سے اِحرام باندھ لینا کافی نہیں، بلکہ ان کو دوبارہ بیرونی میقات پر واپس جانا ضروری ہے، اگر بیرونی میقات پر دوبارہ واپس نہیں گئے اور مسجدِ عائشہ سے اِحرام باندھ لیا تو دَم لازم آئے گا۔
بغیر اِحرام کے میقات سے گزرنے والے پر دَم
س… ایک واقعہ یوں پیش آیا کہ ایک شخص حج کی نیت سے سعودی عرب گیا، لیکن پہلے اس نے ریاض میں قیام کیا، پھر مدینہ منوّرہ آگیا، اس کے بعد اِحرام باندھ کر مکہ مکرّمہ جاکر عمرہ ادا کیا اور پھر ریاض واپس چلا گیا۔ اس کے بعد حج سے ایک ہفتہ پہلے بغیر اِحرام کے پھر مکہ مکرّمہ آیا، کسی نے اسے بتلایا کہ تم نے غلطی کی ہے، تمہیں یہاں بغیر اِحرام کے نہیں آنا چاہئے تھا، لہٰذا اس نے تنعیم جاکر اِحرام باندھا اور عمرہ کیا۔ کیا یہ صحیح ہوا اور غلطی کا ازالہ ہوگیا یا اس پر دَم واجب ہوگا؟
ج… صورتِ مسئولہ میں چونکہ اس شخص نے اپنے میقات سے گزرنے کے وقت فی الحال مکہ مکرّمہ جانے کی نیت نہیں کی تھی بلکہ ریاض اور پھر مدینہ منوّرہ جاکر وہاں سے اِحرام باندھنے کا ارادہ تھا، اس لئے اس پر بغیر اِحرام کے میقات سے گزرنے کا دَم واجب نہیں۔ دُوسری دفعہ جو یہ شخص ریاض سے مکہ مکرّمہ بغیر اِحرام کے آیا، اس کی وجہ سے اس پر دَم واجب ہوچکا ہے، تنعیم پر آکر عمرہ کا اِحرام باندھنے سے اس غلطی کا ازالہ نہیں ہوا، اور دَم ساقط نہیں ہوا۔ ہاں! اگر یہ شخص میقات پر واپس لوٹ جاتا اور وہاں سے حج کا یا عمرہ کا اِحرام باندھ کر آتا تو دَم ساقط ہوجاتا۔
میقات سے اگر بغیر اِحرام کے گزر گیا تو دَم واجب ہوگیا، لیکن اگر واپس آکر میقات سے اِحرام باندھ لیا تو دَم ساقط ہوگیا
س… میں ۱۷/رمضان المبارک کو ریاض سے مکة المکرمہ کو روانہ ہوا تھا، میری وہاں پر چند دن ڈیوٹی تھی، لیکن سفر کی وجہ سے میری طبیعت خراب ہوگئی، اس لئے میں میقات پر اِحرام نہ باندھ سکا۔ دو دن مکہ میں قیام کرنے کے بعد دوبارہ مدینہ روڈ پر میقات سے آگے جاکر میں نے عمرہ کے لئے اِحرام باندھا اور عمرہ ادا کیا۔ میرے کچھ دوستوں نے کہا کہ اِحرام لازمی پہلے دن باندھنا چاہئے تھا، اس کے متعلق آپ صحیح جواب دیں، میرے سے جو غلطی ہوئی ہو اس کا کیا کفارہ ہے؟
ج… آپ پر میقات سے بغیر اِحرام کے گزرنے کی وجہ سے دَم لازم ہوگیا تھا، اگر آپ دوبارہ میقات سے باہر جاکر اِحرام باندھ کر آئے تو آپ سے دَم ساقط ہوگیا۔ لیکن آپ کے سوال سے کچھ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ آپ عمرہ کا اِحرام باندھنے کے لئے آفاقیوں کی میقات پر نہیں گئے بلکہ صرف حدودِ حرم سے باہر جاکر اِحرام باندھ آئے، اور اسی کو آپ نے میقات سمجھ لیا، کیونکہ مدینہ روڈ پر میقات یا تو رابغ ہے یا ذوالحلیفہ، غالباً آپ دونوں میں سے کسی ایک جگہ بھی نہیں پہنچے ہوں گے۔ بہرحال آپ کے سوال سے میں نے جو کچھ سمجھا ہے اگر یہ صحیح ہے تو آپ کے ذمہ سے دَم ساقط نہیں ہوا، اور اگر واقعی آپ آفاقیوں کی کسی میقات سے باہر جاکر اِحرام باندھ کر آئے تھے تو دَم آپ سے ساقط ہوگیا۔
بغیر اِحرام کے مکہ میں داخل ہونا
س… میں یہاں طائف میں سروس کرتا ہوں، میں نے ایک حج کیا ہے اور عمرے بہت کئے ہیں، ابھی آٹھ مہینے ہوئے میں ہر جمعہ کو مکہ مکرّمہ جاتا ہوں، وہاں جمعہ کی نماز بیت اللہ شریف میں پڑھتا ہوں، میرا بڑا بھائی مکہ مکرّمہ میں کام کرتا ہے، اس سے ملاقات بھی کرتا ہوں۔ میرا ایک ساتھی ہے، اس کا کہنا ہے کہ بغیر اِحرام کے مکہ مکرّمہ میں داخل ہونے سے دَم دینا پڑتا ہے۔ یعنی آپ جتنی مرتبہ گئے ہیں اتنی بار دَم دینا پڑے گا۔ اب آپ مجھے یہ بتائیے کہ دَم دینا پڑے گا؟ کیونکہ میں یہی ارادہ کرکے جاتا ہوں کہ مکہ مکرّمہ جاوٴں گا، طواف کروں گا، جمعہ کی نماز پڑھوں گا، پھر بھائی سے ملاقات کروں گا۔
ج… جو لوگ میقات سے باہر رہتے ہیں، اگر وہ مکہ مکرّمہ آئیں خواہ ان کا آنا کسی ذاتی کام ہی کے لئے ہو، ان کے ذمہ میقات سے حج یا عمرہ کا اِحرام باندھنا لازم ہے، اگر وہ اِحرام کے بغیر مکہ مکرّمہ چلے گئے اور واپس آکر میقات پر اِحرام نہیں باندھا تو وہ گناہ گار ہوں گے اور ان کے ذمہ حج یا عمرہ بھی واجب ہوگا۔ دُوسرے ائمہ کے نزدیک یہ پابندی صرف ان لوگوں پر ہے جو حج و عمرہ کی نیت سے میقات سے گزریں، دُوسرے لوگوں پر اِحرام باندھنا لازم نہیں۔ حنفی مذہب کے مطابق آپ جتنی مرتبہ بغیر اِحرام کے مکہ مکرّمہ گئے، آپ کے ذمہ اتنے عمرے لازم ہیں اور جو کوتاہی ہوچکی ہے اس پر اِستغفار بھی کیا جائے۔
شوہر کے پاس جدہ جانے والی عورت پر اِحرام باندھنا لازم نہیں
س… میں عرصہ ساڑھے چار سال سے سعودی عرب میں مقیم ہوں۔ ہر سال ایک مہینہ چھٹی پر جاتا ہوں، گزشتہ رمضان میں حسبِ معمول چھٹی پر پاکستان چلا گیا، لیکن جانے سے پہلے میں نے بیوی کے لئے وزٹ ویزا ارسال کیا تھا۔ ویزا ارسال کرتے وقت میرے دو مقصد تھے:    ۱:…وزٹ۔        ۲:… حج۔
          یعنی میرا خیال تھا کہ بچے حج بھی کرلیں گے اور میرے ساتھ بھی کچھ عرصہ گزار لیں گے، اور کچھ توسیع بھی کرالوں گا کیونکہ وزٹ ویزا صرف تین مہینے کا ہوتا ہے۔ بہرحال ۲۹/شوال کو پاکستان سے میری مع اہل و عیال روانگی ہوئی، میں چونکہ ملازمت کے سلسلے میں رہتا تھا لیکن گھر والوں کو تو حج اور وزٹ مقصود تھا، کراچی ایئرپورٹ سے اِحرام نہیں باندھا تھا۔ ۲۹/شوال کو جدہ پہنچ گیا، ۳۰/شوال کا دن بھی جدہ میں گزار دیا، یعنی تیسرے دن میں بچوں کو عمرہ پر لے گیا اور پھر حج بھی ادا کیا اور پھر وہ تین مہینے کے بعد واپس پاکستان چلے گئے۔ چونکہ میری بیوی اَن پڑھ تھی اور میں نے بھی خیال نہیں کیا کیونکہ میرا خیال تھا کہ میں تو جدہ میں مقیم ہوں، بیوی وزٹ ویزے پر آرہی ہے، اِحرام کی ضرورت نہیں۔ لیکن میرے خیال میں حج کرانا بھی ضروری تھا اور بیوی کا بھی زیادہ تر حج کا مقصد تھا۔ یعنی ایسا نہیں تھا کہ وہ وزٹ ویزے پر آئی تھی اور یہاں حج کا ارادہ ہوگیا، یعنی پاکستان سے بھی حج کا ارادہ ضرور تھا۔ اب مسئلہ یہ ہے کہ کیا میری بیوی پر دَم واجب ہے یا کہ نہیں؟ اگر ہے تو اب تک جتنی دیر ہوگئی ہے اس کا کیا ہوگا؟ کیا میں بیوی کی طرف سے دَم کی قربانی یہاں (مکہ مکرّمہ) میں کرسکتا ہوں جبکہ ان کو پتہ بھی نہیں؟
ج… مندرجہ بالا صورت میں چونکہ آپ کا قیام جدہ میں ہے، اور آپ کی اہلیہ آپ کے پاس اصلاً جدہ گئی تھیں، اور ویزے کا مدعا بھی یہی تھا، گو اصل مقصد حج کرنا ہی تھا، اس لئے میرے خیال میں اس کو میقات سے اِحرام باندھنا لازم نہیں تھا، اور نہ اس پر دَم لازم ہوا۔
حج و عمرہ کے ارادے سے جدہ پہنچنے والے کا اِحرام
س… اگر کوئی شخص پاکستان، امریکہ، انگلینڈ یا کسی بھی ملک سے حج و عمرہ کے ارادے سے روانہ ہوا اور جدہ بغیر اِحرام کے پہنچا تو:
          الف:… اب وہ کس مقام پر لوٹ کر اِحرام باندھے؟
          ب:… اگر اس نے جدہ ہی سے اِحرام باندھا تو کیا ہوگا؟
ج…الف: جو شخص بغیر اِحرام کے میقات سے گزر جائے اس کے لئے افضل تو یہ ہے کہ اپنے میقات پر واپس آکر اِحرام باندھ لے، البتہ کسی بھی میقات پر جاکر اِحرام باندھنے سے دَم ساقط ہوجائے گا۔
ج…ب: اگر جدہ سے اِحرام باندھا تب بھی اس پر دَم لازم نہیں آئے گا۔
کیا اِحرام جدہ سے باندھ سکتے ہیں؟
س… عمرہ کے اِحرام کے سلسلے میں ایک ضروری مسئلہ یہ ہے کہ پی آئی اے کے ملازمین کو عمرہ کے لئے مفت ٹکٹ ملتا ہے، لیکن یہ ٹکٹ کنفرم نہیں ہوتا بلکہ جہاز کی روانگی سے چند منٹ پہلے اگر کچھ نشستیں باقی بچ جائیں تو اس ٹکٹ پر سیٹ ملتی ہے، اس وقت اتنا موقع نہیں ہوتا کہ اِحرام باندھا جاسکے، بعض اوقات کئی کئی روز تک سیٹ نہیں ملتی اور ملازمین کی چھٹی ختم ہوجاتی ہے اور وہ عمرہ پر نہیں جاسکتے۔ ایسی صورت میں کیا وہ جدہ جاکر اِحرام باندھ سکتے ہیں؟ جہاز کے ٹوائلٹ، واش رُوم میں بھی اتنی گنجائش نہیں ہوتی کہ غسل کرکے اِحرام باندھا جاسکے۔ اگر کراچی سے اِحرام باندھیں اور سیٹ نہ ملنے کی وجہ سے اِحرام کھولنا پڑے تو کیا کیا جائے؟ ملازمین بلکہ تمام لوگ جدہ جاکر اِحرام باندھتے ہیں۔
ج… اِحرام باندھنے کے لئے غسل کرنا اور نوافل پڑھنا شرط نہیں، مستحب ہے، لہٰذا عذر کی صورت میں صرف سلے ہوئے کپڑے اُتار کر چادریں پہن لیں اور عمرہ کی نیت کرکے تلبیہ پڑھ لیں، بس اِحرام بندھ گیا۔ اور یہ کام جہاز پر سوار ہونے سے پہلے بھی ہوسکتا ہے اور جہاز پر سوار ہوکر بھی ہوسکتا ہے، جدہ جاکر اِحرام باندھنا دُرست نہیں کیونکہ بعض اوقات جہاز حرم کے اُوپر سے جاتا ہے، اس لئے جہاز پر سوار ہونے سے پہلے یا سوار ہوکر اِحرام باندھ لینا ضروری ہے، اور اس کا طریقہ اُوپر عرض کردیا ہے۔
جدہ جاکر اِحرام باندھنا صحیح نہیں
س… کئی مرتبہ عمرہ پر دیکھا گیا کہ پاکستان سے جانے والے احباب جدہ ایئرپورٹ پر اِحرام باندھتے ہیں، آیا جدہ پر اِحرام باندھنے سے عمرہ ہوجاتا ہے یا نہیں؟ اگر نہیں ہوتا تو اس کا بدل کیا ہے؟ آیا دَم یا صدقہ جس سے ناقص عمرہ صحیح ہوجائے۔
ج… اگر پاکستان سے عمرہ کرنے کے ارادے سے گئے ہیں تو پھر جدہ میں اِحرام نہیں باندھنا چاہئے، بلکہ کراچی سے اِحرام باندھ کر جانا چاہئے یا جہاز میں اِحرام باندھ لیا جائے، اگر کسی نے جدہ سے اِحرام باندھا تو اس کے ذمہ دَم لازم ہے یا نہیں؟ اس میں اکابر کا اختلاف رہا ہے۔ احتیاط کی بات یہ ہے کہ اگر کوئی ایسا کرچکا ہو تو دَم دے دیا جائے اور آئندہ کے لئے اس سے پرہیز کیا جائے۔
جدہ سے اِحرام کب باندھ سکتا ہے؟
س… اگر کسی کا عمرے کا ارادہ ہو لیکن اس کو جدہ میں بھی کوئی کام ہو، مثلاً: رشتہ داروں سے ملنا یا اور کوئی کاروباری کام ہو، تو کیا یہ شخص بغیر اِحرام کے جدہ جاسکتا ہے، جبکہ جدہ کا اور اس کے بعد عمرے کا ارادہ ہو؟
ج… اگر وہ کراچی سے جدہ کا سفر عزیزوں سے ملنے کے لئے کر رہا ہے اور کراچی سے اس کی نیت عمرہ کے سفر کی نہیں تو اس کو میقات سے اِحرام باندھنے کی ضرورت نہیں، جدہ پہنچ کر اگر اس کا عمرہ کا ارادہ ہوجائے تو جدہ سے اِحرام باندھ لے۔ عمرہ ہی کے لئے سفر کر رہا ہو تو اس کو میقات سے پہلے اِحرام باندھنا ضروری ہے۔ لہٰذا مذکورہ صورت میں جب پہلے جدہ کا ارادہ ہے تو اِحرام باندھنا ضروری نہیں، اس کے بعد پھر جب جدہ سے عمرہ کا ارادہ کرلے تو وہاں سے اِحرام باندھ لے۔
جدہ سے مکہ آنے والوں کا اِحرام باندھنا
س… کیا جدہ میں مستقل قیام یا جس کی نیت پندرہ دن قیام کی ہو یا اس سے کم مدّت ٹھہرے، جدہ سے بغیر اِحرام کے مکہ مکرّمہ آسکتا ہے یا نہیں؟
ج… جدہ میں رہنے والوں کو بغیر اِحرام کے مکہ مکرّمہ آنا جائز ہے، جبکہ وہ حج و عمرہ کے ارادے سے مکہ مکرّمہ نہ جائیں۔ یہی حکم ان تمام لوگوں کا ہے جو کسی کام سے جدہ آئے تھے پھر وہاں آنے کے بعد ان کا ارادہ مکہ مکرّمہ جانے کا ہوگیا، ان کو بھی اِحرام کے بغیر آنا جائز ہے۔
س… ایک شخص جدہ گیا، وہاں چند دن قیام کیا، پھر مکہ مکرّمہ عمرہ کرنے کی نیت سے گیا، لیکن اِحرام نہیں باندھا بلکہ پہلے حرم شریف کے پاس ہوٹل میں کمرہ لیا اور پھر تنعیم جاکر اِحرام باندھا، یہ صحیح ہوا یا غلط ہوا؟
ج… غلط ہوا، کیونکہ جب یہ شخص عمرہ کی نیت سے مکہ مکرّمہ کو چلا تو حدودِ حرم میں داخل ہونے سے پہلے اس کو عمرہ کا اِحرام باندھنا لازم تھا، اور حدودِ حرم میں بغیر اِحرام کے داخل ہونا اس کے لئے جائز نہیں تھا، اس لئے بغیر اِحرام کے حدودِ حرم میں داخل ہونے کی وجہ سے گناہ گار ہوا، تاہم جب اس نے حرم سے باہر آکر تنعیم سے عمرہ کا اِحرام باندھ لیا تو دَم تو ساقط ہوگیا، مگر گناہ باقی رہا، توبہ اِستغفار کرے۔

س… اگر یہ شخص عمرہ کی نیت سے مکہ مکرّمہ کو نہ جائے بلکہ یونہی جائے یا طواف کی نیت سے جائے اور حرم شریف کے باہر ہوٹل میں کمرہ لے لے اور طواف کرکے واپس ہوجائے تو؟ یا ہوٹل میں قیام کے بعد عمرہ کرنے کا ارادہ پیدا ہوا اور تنعیم جاکر اِحرام باندھا تو کیا اس صورت میں بھی گناہ گار ہوا؟
ج… اس صورت میں گناہ گار نہیں، کیونکہ یہ شخص عمرہ کی نیت سے مکہ مکرّمہ نہیں آیا تھا، بلکہ مکہ شریف پہنچنے کے بعد اس کا ارادہ ہوا کہ عمرہ بھی کرلوں، اس لئے بغیر اِحرام کے حرم میں آنے کا گناہ اس کے ذمہ نہیں۔ اب اگر یہ عمرہ کرنا چاہتا ہے تو اہلِ مکہ کی طرف حرم سے باہر جاکر اِحرام باندھ کر آئے۔
اِحرام کھولنے کا کیا طریقہ ہے؟
س… حج یا عمرہ کا جب اِحرام باندھتے ہیں جس طرح اِحرام باندھنے کی شرائط ہیں اسی طرح اِحرام کھولنے کی بھی شرائط ہیں۔ بال کٹوانا ہے تو بال کٹوانے کا طریقہ اور اصل مسئلے کی وضاحت فرمائیں۔
ج… اِحرام کھولنے کے لئے حلق (یعنی اُسترے سے سر کے بال صاف کردینا) افضل ہے، اور قصر جائز ہے۔ امام ابوحنیفہ کے نزدیک اِحرام کھولنے کے لئے یہ شرط ہے کہ کم سے کم چوتھائی سر کے بال ایک پورے کے برابر کاٹ دئیے جائیں، اگر سر کے بال چھوٹے ہوں اور ایک پورے سے کم ہوں تو اُسترے سے صاف کرنا ضروری ہے، اس کے بغیر اِحرام نہیں کھلتا۔
عمرہ سے فارغ ہوکر حلق سے پہلے کپڑے پہننا
س… دو سال قبل عمرہ کے لئے گیا تھا، تقریباً دس دن مکہ مکرّمہ میں گزارے، آخری دن جب عمرہ کیا تو بہت جلدی میں تھا، کیونکہ میری فلائٹ میں صرف چار گھنٹے رہ گئے تھے، ڈَر تھا کہ کہیں فلائٹ نکل نہ جائے، اسی جلدی میں عمرہ سے فارغ ہوکر پہلے حلق کرانے کے بجائے پہلے اِحرام کھول کے کپڑے پہن کے حلق (بال کٹوائے) کرایا۔ اس وقت جلدی میں تھا تو یاد نہیں رہا کہ میں نے غلط کیا ہے، جب یہاں پہنچا تو ایک دوست سے باتوں باتوں میں مجھے یاد آیا کہ میں نے اِحرام کھول کر حلق کرایا تھا۔ برائے مہربانی مجھے بتائیں کہ کیا مجھ پر جزا (دَم) واجب ہے یا نہیں؟ اگر جزا واجب ہے تو کیا میں مکہ مکرّمہ سے باہر دَم دے سکتا ہوں یا اس کے لئے مکہ مکرّمہ میں حاضر ہونا ضروری ہے؟ ان شاء اللہ اس سال حج کا ارادہ ہے، کیا حج سے پہلے دَم دینا ہوگا یا کہ حج کی قربانی کے ساتھ یہ جزا (دَم) کے طور پر ایک بکرا ذبح کردُوں۔ اُمید ہے کہ آپ جلدی جواب دیں گے۔
ج… اس غلطی کی وجہ سے آپ کے ذمہ دَم لازم نہیں آیا، بلکہ صدقہٴ فطر کی مقدار صدقہ آپ پر لازم ہے، اور یہ صدقہ آپ کسی بھی جگہ دے سکتے ہیں۔
اِحرام کھولنے کے لئے کتنے بال کاٹنے ضروری ہیں؟
س… حج یا عمرہ کے موقع پر سر کے بال کٹوائے جاتے ہیں، کچھ لوگ چند بال کٹواتے ہیں اور امام ابوحنیفہ کے مقلد ہیں، کیا اس طرح بال کٹوانے سے ان کا اِحرام کھل جاتا ہے؟ اِحرام کے ممنوعات حلال ہوجاتے ہیں؟
ج… حضرت امام ابوحنیفہ کے نزدیک اِحرام کھولنے کے لئے کم سے کم چوتھائی سر کے بالوں کا ایک پورے کی مقدار کاٹنا شرط ہے۔ اس لئے جو لوگ چند بال کاٹ لیتے ہیں ان کا اِحرام نہیں کھلتا اور اسی حالت میں ممنوعات کا ارتکاب کرنے کی وجہ سے ان پر دَم لازم آتا ہے، (یہاں واضح رہے کہ سر کے چوتھائی حصے کے بال کاٹنا اِحرام کھولنے کی شرط ہے، لیکن سر کے کچھ بال کاٹ لینا اور کچھ چھوڑ دینا جائز نہیں، حدیث میں اس عمل کی ممانعت آئی ہے، اس لئے اگر کسی نے چوتھائی سر کے بال کاٹ لئے تو اِحرام تو کھل جائے گا، مگر باقی بال نہ کاٹنے کی وجہ سے گناہ گار ہوگا)۔
س… اس مرتبہ عمرہ پر اکثر لوگوں کو دیکھا گیا ہے کہ عمرہ کے بعد بال کاٹے بغیر اِحرام کھول لیتے ہیں یا بعض لوگ چاروں طرف سے معمولی معمولی بال کاٹ لیتے ہیں اور یہ کہتے ہیں کہ چوتھائی کاٹنے کا حکم ہے جو کہ اس طرح پورا ہوجاتا ہے، اور بعض لوگ مشین سے کاٹتے ہیں۔ پوچھنا یہ ہے کہ ایسے لوگوں کے بارے میں کیا حکم ہے؟ ان کا اِحرام کا اُتارنا آیا دَم وغیرہ کو واجب کرتا ہے یا نہیں؟ اور مسنون طریقہ کیا ہے؟
ج… حج و عمرہ کا اِحرام کھولنے کے لئے چار صورتیں اختیار کی جاتی ہیں، ہر ایک کا حکم الگ الگ لکھتا ہوں۔
          اوّل یہ کہ حلق کرایا جائے، یعنی اُسترے سے سر کے بال اُتار دئیے جائیں، یہ صورت سب سے افضل ہے اور حلق کرانے والوں کے لئے آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے تین مرتبہ رحمت کی دُعا فرمائی ہے، جو شخص حج وغیرہ پر جاکر بھی آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کی دُعائے رحمت سے محروم رہے، اس کی محرومی کا کیا ٹھکانا․․․؟ اس لئے حج و عمرہ پر جانے والے تمام حضرات کو مشورہ دُوں گا کہ وہ آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کی دُعا سے محروم نہ رہیں، بلکہ حلق کراکر اِحرام کھولیں۔
          دُوسری صورت یہ ہے کہ قینچی یا مشین سے پورے سر کے بال اُتار دئیے جائیں، یہ صورت بغیر کراہت کے جائز ہے۔
          تیسری صورت یہ ہے کہ کم سے کم چوتھائی سر کے بال کاٹ دئیے جائیں، یہ صورت مکروہِ تحریمی اور ناجائز ہے، کیونکہ ایک حدیث میں اس کی ممانعت آئی ہے، مگر اس سے اِحرام کھل جائے گا۔ اب یہ خود سوچئے کہ جو حج و عمرہ جیسی مقدس عبادت کا خاتمہ ایک ناجائز فعل سے کرتے ہیں ان کا حج و عمرہ کیا قبول ہوگا․․․؟
          چوتھی صورت میں جبکہ اِدھر اُدھر سے چند بال کاٹ دئیے جائیں جو چوتھائی سر سے کم ہوں، اس صورت میں اِحرام نہیں کھلے گا، بلکہ آدمی بدستور اِحرام میں رہے گا، اور اس کو ممنوعاتِ اِحرام کی پابندی لازم ہوگی، اور سلا ہوا کپڑا پہننے اور دیگر ممنوعاتِ اِحرام کا ارتکاب کرنے کی صورت میں اس پر دَم لازم ہوگا۔ آج کل بہت سے ناواقف لوگ دُوسروں کی دیکھا دیکھی اسی چوتھی صورت پر عمل کرتے ہیں، یہ لوگ ہمیشہ اِحرام میں رہتے ہیں، اسی اِحرام کی حالت میں تمام ممنوعات کا ارتکاب کرتے ہیں، وہ اپنی ناواقفی کی وجہ سے سمجھتے ہیں کہ ہم نے چند بال کاٹ کر اِحرام کھول دیا، حالانکہ ان کا اِحرام نہیں کھلا اور اِحرام کی حالت میں خلافِ اِحرام چیزوں کا ارتکاب کرکے اللہ تعالیٰ کے قہر و غضب کو مول لیتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ہزاروں لوگوں میں کوئی ایک آدھ ہوگا جس کا حج و عمرہ شریعت کے مطابق ہوتا ہو، باقی لوگ سیر سپاٹا کرکے آجاتے ہیں اور ”حاجی“ کہلاتے ہیں، عوام کو چاہئے کہ حج و عمرہ کے مسائل اہلِ علم سے سیکھیں اور ان پر عمل کریں، محض دیکھا دیکھی سے کام نہ چلائیں۔
حج کا اِحرام طواف کے بعد کھول دیا تو کیا کیا جائے؟
س… میں نے کراچی سے ہی سب کے ساتھ حج کا اِحرام باندھ لیا تھا، مکہ شریف میں طواف کرنے کے بعد کھول دیا، تو اب مجھے کیا کرنا چاہئے؟
ج… آپ پر حج کا اِحرام توڑنے کی وجہ سے دَم لازم ہوا، اور حج کی قضا لازم ہوئی، حج تو آپ نے کرلیا ہوگا، دَم آپ کے ذمہ رہا، اور اس فعل پر ندامت کے ساتھ توبہ اِستغفار بھی کیجئے، اللہ تعالیٰ سے معافی بھی مانگئے۔
عمرہ کے اِحرام سے فراغت کے بعد حج کا اِحرام باندھنے تک پابندیاں نہیں ہیں
س… پاکستان سے حجِ تمتع کے لئے اِحرام باندھ کر چلے، مگر مکہ پہنچ کر پہلے عمرہ ادا کیا اور اِحرام کھول دئیے۔ اب سوال یہ ہے کہ اِحرام کھولنے کے بعد جہاں وہ پابندیاں ختم ہوجاتی ہیں جو اِحرام کی حالت میں تھیں، وہاں کیا یہ پابندی بھی ختم ہوجاتی ہے کہ بیوی شوہر پر حلال ہوجاتی ہے؟ کیونکہ اِحرام کی حالت میں حرام تھی۔ ابھی حج کے لئے عمرہ کے بعد دس دن باقی ہیں اور اگر ایسا کسی نے کیا تو کیا اس کا حج قبول ہوگا کہ نہیں؟ اور اگر خدانخواستہ نہیں ہوتا تو وہ کیا کرے؟ اگر دوبارہ آئندہ سال حج کرنے کا حکم ہے اور وہ آئندہ سال حج نہ کرسکے، وجہ مجبوری ہے، پیسہ نہ ہونے کی۔
ج… عمرہ کے اِحرام سے فارغ ہونے کے بعد سے حج کا اِحرام باندھنے تک جو وقفہ ہے، اس میں جس طرح کسی اور چیز کی پابندی نہیں، اسی طرح میاں بیوی کے تعلق کی بھی پابندی نہیں۔ اس لئے عمرہ سے فارغ ہوکر حج کا اِحرام باندھنے سے پہلے بیوی سے ملنا جائز ہے، اس سے حج کا ثواب ضائع نہیں ہوتا، نہ آئندہ سال حج کرنا لازم آتا ہے۔
اِحرام والے کے لئے بیوی کب حلال ہوتی ہے؟
س… کیا یہ صحیح ہے کہ طوافِ زیارت نہ کرنے والے پر اس کی بیوی حرام ہوجاتی ہے؟ بحوالہ تحریر فرمائیں۔ اور کیا قربانی سے پہلے طوافِ زیارت کیا جاسکتا ہے؟
ج… جب تک طوافِ زیارت نہ کرے بیوی حلال نہیں ہوتی، گویا بیوی کے حق میں اِحرام باقی رہتا ہے۔ قربانی سے پہلے طوافِ زیارت جائز ہے مگر افضل یہ ہے کہ بعد میں کرے۔
اِحرام باندھنے کے بعد بغیر حج کے واپسی کے مسائل
س… ہوائی جہاز سے جانے والے حنفی عازمینِ حج گھر سے اِحرام باندھ کر نکلتے ہیں، اگر اتفاق سے کوئی حاجی (جو اِحرام باندھے گھر سے چلا ہو) کسی مجبوری کے سبب ایئرپورٹ سے واپس ہوجائے اور حج پر نہ جائے تو کیا وہ اِحرام نہیں اُتار سکتا تاوقتیکہ قربانی کے جانور کی رقم حدودِ حرم میں نہ بھیج دے اور وہاں سے قربانی ہوجانے کی اطلاع نہ مل جائے، خواہ اس میں دس پندرہ دن لگ جائیں؟
ج… گھر سے اِحرام کی چادریں پہن لینی چاہئیں، مگر اِحرام نہ باندھا جائے، اِحرام اس وقت باندھا جائے جب سیٹ پکی ہوجائے۔ اِحرام باندھنے کا مطلب ہے حج یا عمرہ کی نیت سے تلبیہ پڑھ لینا۔ اور اگر اِحرام باندھ چکا تھا اس کے بعد نہیں جاسکا، تو جیسا کہ آپ نے لکھا وہ قربانی کی رقم کسی کے ہاتھ مکہ مکرّمہ بھیج دے اور آپس میں یہ طے ہوجائے کہ فلاں دن قربانی کا جانور ذبح ہوگا، جب قربانی کا جانور ذبح ہوجائے تب یہ اِحرام کھولے اور آئندہ اس حج کی قضا کرے۔
کیا حالتِ اِحرام میں ناپاک ہونے پر دَم واجب ہے؟
س… حالتِ اِحرام میں عورت یا مرد کسی عذر کی بنا پر ناپاک ہوگئے تو ان کی پاکی کا کیا طریقہ ہوگا؟ آیا ان پر دَم وغیرہ ہوگا یا کچھ بھی نہیں؟
ج… کوئی دَم وغیرہ نہیں۔
ناپاکی کی وجہ سے اِحرام کی نچلی چادر کا بدلنا
س… مجھ کو اکثر عمرہ کرنے کی سعادت نصیب ہوتی ہے، اور میں کراچی سے اِحرام باندھ کر جاتا ہوں، مگر ضعیفی کی وجہ سے مجھے پیشاب جلدی جلدی آتا ہے اور ہوائی جہاز کے چار گھنٹے کے سفر میں تین مرتبہ غسل خانہ جانا پڑتا ہے۔ غسل خانہ اس قدر تنگ ہوتا ہے کہ اِحرام کا پاک رہنا قطعی ناممکن ہے، کیا اسی حالت میں عمرہ کرلوں یا نیچے کا اِحرام بدل سکتا ہوں؟ دُوسری صورت کیا یہ بھی ہوسکتی ہے کہ جدہ میں میری ایک بیٹی رہتی ہے، اس کے ہاں ایک شب قیام کروں اور وہاں سے اِحرام باندھوں؟
ج… اِحرام تو سوار ہونے سے پہلے یا بعد میں باندھ لینا چاہئے، اِحرام کی نیچے والی چادر بدل لیا کریں۔
اِحرام کی حالت میں بال گریں تو کیا قربانی کی جائے؟
س… میرے سر اور داڑھی کے بال بہت زیادہ گرتے ہیں، سنا ہے کہ اِحرام کی حالت میں جتنے بال گریں اتنی قربانیاں دینی پڑتی ہیں، حج کی صورت میں، جبکہ میں معذور ہوں، مسئلہ واضح فرمائیں۔
ج… جتنے بال گریں اتنی قربانیاں دینے کا مسئلہ غلط ہے، البتہ وضو احتیاط سے کرنا چاہئے تاکہ بال نہ گریں اور اگر گر جائیں تو صدقہ کردینا کافی ہے۔
عمرہ کرنے کے بعد حج کے لئے اِحرام دھونا
س… حج سے قبل تمتع کا اِحرام باندھ کر عمرہ ادا کیا جائے گا، ۸/ذوالحجہ کو اس اِحرام کو دھوکر باندھنا چاہئے یا بغیر دھوئے ہوئے استعمال کرلیں؟
ج… تمتع کا عمرہ کرنے کے بعد اِحرام کی چادروں کو دھونا ضروری نہیں، اگر وہ پاک ہوں تو انہی چادروں میں حج کا اِحرام باندھ سکتے ہیں۔
کیا ہر مرتبہ عمرہ کے لئے اِحرام دھونا پڑے گا؟
س… ہر مرتبہ عمرہ کرنے کے لئے اِحرام دھونا پڑے گا یا اسی اِحرام کو دُوسری، تیسری مرتبہ پانچ دن تک بغیر دُھلے استعمال کریں؟
ج… اِحرام کی چادروں کا ہر مرتبہ دھونا کوئی ضروری نہیں۔
اِحرام کی چادر استعمال کے بعد کسی کو بھی دے سکتے ہیں
س… کیا ہم حج کے بعد اِحرام کسی غریب کو دے دیں کہ وہ اپنی ضرورت کے لئے استعمال کرے؟
ج… اِحرام کی چادر خود بھی استعمال کرسکتے ہیں، کسی کو دینا چاہیں تو دے بھی سکتے ہیں۔
اِحرام کو تولیہ کی جگہ استعمال کرنا
س… اِحرام جو کہ تولیہ کے کپڑا کا ہے، اس کو عام استعمال میں تولیہ کی جگہ استعمال کرسکتے ہیں یا نہیں؟
ج… کرسکتے ہیں۔
اِحرام کے کپڑے کو بعد میں دُوسری جگہ استعمال کرنا
س… حج اور عمرہ کے دوران جو کپڑا بطور اِحرام استعمال کرتے ہیں، کیا اس کو عام کپڑوں کی طرح گھر میں استعمال کرسکتے ہیں؟ یعنی تولیہ کو تولیہ کی جگہ اور لٹھّے کو شلوار قمیص بناکر پہن سکتے ہیں یا نہیں؟
ج… اِحرام کے کپڑوں کا عام استعمال جائز ہے۔

A330Pilot کی طرف سے پیش کردہ تھیم کی تصویریں. تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.